MASJID-E-SHAMS



مدینہ المنوره میں اس مقام کوحرف عام میں 
'' مسجد شمس ''کے نام سے یاد کیا جاتا ہے - یہ دراصل وہ مقام ہے جہاں رسول الله صلی الله علیہ وسلم نے 
''رد شمس''یعنی سورج کے غروب ہونے کے بعد اسے دوبارہ پلٹانے کا معجزہ دیکھایا تھا -

ایک مرتبہ رسول مکرم محمّد صلی الله علیہ وسلم اس مقام پر سیدنا علی [ ر - ض ] کی گود میں یا رانوں پر سر رکھے آرام فرما رہے تھے اور اس دوران نماز عصر کا وقت ہوگیا لیکن سیدنا علی [ ر - ض ] نے آپکو جگانے کی جرات نہیں کی - وقت گزرتا گیا یھاں تک کہ سورج ڈھل گیا اور عصرکی نماز کا وقت نکل گیا -

جب رسول الله صلی الله علیہ وسلم خود سے بیدار ہوتے تو آپ نے سیدنا علی [ ر - ض ] کو مضطرب پایا - آپ نے جب دریافت کیا تو سیدنا علی [ ر - ض ] نے عرض کیا کہ ''یا رسول الله عصر کی نماز قضا ہو گیی ہے اور میں نے آج تک عصر کی نماز قضا نہیں کی ''

اس موقع پر رسول الله صلی الله علیہ وسلم نے ڈوبے ہوے سورج کی جانب اشارہ کیا اور سورج ایک فرمانبردارخادم مانند اپنی روایت اور عادت کے برعکس مغرب کی گھاٹیوں سے دوبارہ نمودار ہوا اور آسمان پر اسقدر اونچائی پر آ کر ایستادہ ہوگیا کہ اب عصر کی نماز کی نماز ادا کی جاسکتی تھی - رسول الله کے معجزہ کو '' رد شمس '' کا معجزہ کہا جاسکتا ہے - پھر اس مقام پر عصر رسول الله صلی الله علیہ وسلم اور سیدنا علی
 [ ر - ض ] نے عصر کی یادگار تاریخی نماز ادا کی -

LIST PAGE
Previous Page

Next Page