حش کوکب اور
( قبر سیدنا عثمان غنی ( ر- ض
 
===================




زیر نظر تصویر خلیفہ راشد سیدنا عثمان بن عفانؓ رضی الله تعالی عنہ کی قبر مبارک کی ہے جو اس وقت مدینہ المنوره کے مقدس قبرستان جنت البقیع میں موجود ہے۔

لیکن ہم میں سے بہت سے لوگوں کے لیے شاید یہ بات نئی ہو کہ جب امیر المؤمنین سیدنا عثمان رضی الله تعالی عنہ کی شہادت کا الم ناک واقعہ پیش آیا تو مدینہ منورہ کے حالات اس قدر پُرخطر تھے کہ امیر المؤمنین کو جنت البقیع میں دفن کرنا ممکن نہ تھا ۔

اسلئے یہ فیصلہ کیا گیا کہ آپکی تدفین اس وقت کے جنت البقیع کے مشرق میں واقع 'حُشِ کوکب نامی ایک باغ میں کر دی جایے -

کسی زمانے میں اس باغ کا مالک کا نام کوکب تھا۔ اسی نسبت سے یہ باغ حُشِّ کوکب کہلاتا تھا۔ سیدنا عثمانؓ رضی الله تعالی عنہ نے یہ باغ اپنی زندگی میں ہی خرید لیا تھا اور شہادت کے دنوں میں یہ آپ ہی کی ملکیت میں تھا۔ چنانچہ آپ کی تدفین آپ کے اسی باغ میں کر دی گئی - بعد میں امیرالمؤمنین سیدنا معاویہ رضی الله تعالی عنہ کے عہد میں بقیع کی توسیع کرتے



حُشِّ کوکب کا باغ اور اسوقت کے '' جنت البقیع '' آپس میں کیسے ایک دوسرے سے ملحق تھے ،


نقشہ دیکھیں جس میں سرخ سرکل میں '' جنت البقیع '' اور ''سبز سرکل '' میں حُشِّ کوکب کو دکھایا گیا ہے -
 
NEXT PAGE 
PREVIOUS PAGE
LIST PAGE