الله سبحان و تعالی نے ایک مرتبہ
 پھر اپنے گھر ( کعبہ مشرفہ ) کی حفاظت فرمائی

 - اور کیا آپکو علم ہے کہ غلاف کعبہ فائر پروف دھاگوں سے

 تیار کیا جاتا ہے اور کعبہ مشرفہ پر اسکو چڑھانے کے
بعد لاکھوں انسانوں کے کے طواف کے دوران
 اسکے ایک ایک دھاگے کی کس طرح حفاظت کی جاتی ہے
==========================================



پولیس نے چند دن قبل یعنی منگل 7 فروری‬‮ 7102 کوخانہ کعبہ کے قریب سے ایک شخص کو گرفتار کرلیا جو مطاف کی حدود میں خود سوزی کی کوشش کررہا تھا۔ عرب میڈیا کے مطابق مسجد الحرام میں ڈیوٹی پر مامور پولیس اہلکاروں نے منگل کے روز ایک شخص کو خانہ کعبہ کے قریب سے گرفتار کیا جو خود پر پیٹرول چھڑک کر آگ لگانے کی کوشش کررہا تھا۔

سوشل میڈیا پر پوسٹ کی گئی ایک ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ یہ واقعہ خانہ کعبہ کے بالکل قریب پیش آیا اور عینی شاہدین نے سعودی میڈیا کو بتایا کہ اس شخص نے معاذ الله خانہ کعبہ کے سیاہ اور سنہری غلاف کو بھی آگ لگانے کی کوشش کی تھی۔

مسجد حرام کی خصوصی سیکیورٹی فورسز کے سربراہ نے عرب میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ملزم کی گرفتاری کی تصدیق کی اور کہا کہ 40 سالہ شخص کو صحنِ مطاف سے اس وقت حراست میں لیا گیا جب اُس نے خود کو آگ لگانے کی کوشش کی۔ انہوں نے کہا کہ ملزم کی مشکوک حرکات و سکنات دیکھنے کے بعد اہلکار اُس پر کڑی نظر رکھے ہوئے تھے اس لیے انہوں نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے خود سوزی کرنے والے شخص کو گرفتار کر لیا۔ پولیس چیف کے مطابق گرفتار شخص بظاہر نفسیاتی مریض معلوم ہوتا ہے تاہم اُسے مزید تفتیش اور قانونی کارروائی کے لیے متعلقہ حکام کے حوالے کردیا گیا -

'' غلاف کعبہ فایر پروف ہے '' - غلافہ کعبہ بنانے والی فیکڑی کا بیان
============================================
کعبہ مشرفہ کا غلاف بنانے والی فیکٹری '' کسویٰ ہاؤس '' کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ غلاف کعبہ فایر پروف ہے یعنی اس پر آگ کا اثر نہیں ہوتا - فیکٹری کے منتظم اعلی محمد باجوہ کا کہنا ہے کہ غلاف کعبہ کی روز مرہ کی بنیاد پر اصلاح و مرمت کی جاتی ہے اور اس کی تیاری میں جو دھاگہ استعمال ہوتا ہے ، وہ فایر پروف ہے اور ان دھاگوں کو ایک خاص انداز میں استعمال کیا جاتا ہے -

انہوں نے مزید بتایا کہ حج اور عمرے دوران زایرین اکثر غلاف کعبہ کے ساتھ لٹک جاتے ہیں جس سے امکان ہوتا ہے کہ غلاف کعبہ کو نقصان پہنچ جایے یا اسکی چمک اور خوبصورتی میں کوئی کمی آجایے تو فیکٹری کے چند ماہر چوبیس گھنٹے مطاف میں موجود رہتے ہیں اور غلاف کعبہ پر نظر رکھتے ہیں - غلافہ پر اگر کوئی خراش آجایے تو یہ ماہرین فوری طور سے اسے اس طرح رفو کر دیتے ہیں اور اسکی چمک واپس لیے آتے ہیں کہ وہ دوبارہ اپنی اصل حالت میں تبدیل ہو جاتا ہے ٠ اس کام کے لیے ماہرین کا عملہ ہر وقت کعبہ مشرفہ کے اطراف ڈیوٹی پر متعین رہتا ہے -

LIST PAGE
NEXT PAGE
PREVIOUS PAGE